تازہ ترین
ur
بنیادی صفحہ » شاعری » مُراد ساحرؔ

مُراد ساحرؔ

چو کہ پُلّ ئیگ ءَ سْرپان ءَ اے کئے اِنت

ہرچ سر ءِ ہوش ءَ بران ءَ اے کئے اِنت

 

زِندمان ءِ وشّ و سارتیں سرشپاں

مثل ء شپ بُوہ ءَ زَران ءَ اے کئے اِنت

 

دیم ءِ فکر ءِ پجّی ءَ پُشت ءِ حیال

گام پہ گام ءَ چک جنان ءَ اے کئے اِنت

 

چو ہما کونج ءَ کہ سِستگ چہ رمءَ

پہ وتیگاں تلوسان ءَ اے کئے اِنت

 

بے غم اَنت دْرست تو گُشئے زند ءِ غماں

دَر پہ دَر پہ چُنڈے نان ءَ اے کئے اِنت

 

پہ وت ءَ ، ٹکّ ءِ وتی سیر لاپی ءَ

ہرچ گِس ءَ آدْراہ کنان ءَ اے کئے اِنت

 

وہد و پاس و روچ و شپ ساحرؔ گُلءِ

نام ئےِ کہ وِرد اِنت زبان ءَ اے کئے اِنت

 

٭٭٭

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*